مرکزی صفحہ / Uncategorized / نزلے اور زکام سے مکمل نجات ممکن ہے

نزلے اور زکام سے مکمل نجات ممکن ہے

زندہ رہنے کے لئے موسمی تغیر وتبدل اور آب و ہوا کی تبدیلی لازمی ہیں۔ بقول شخصے زندگی کی ایک ہی خوبصور تی ہے اور وہ ہے مسلسل تبدیلی ۔ اتبد یلی تحر یک کاباعث بنتی ہے اورتحر یک جمود توڑتی ہے جبکہ جمود یکسانیت پیدا کرتا ہے اور یکسانیت موت کا دوسرانام ہے۔ انسان نے خدا داد صلاحیتوں کے بل بوتے معاشرت اور تمدن کے کئی ایک طریقے بدلتے وقت کے تقاضوں کے مطابق اپنا لئے ہیں۔ اس

نے اپنے طرز رہن سہن اور بودوباش کوموسموں کے موافق اختیار کر کے کئی ایک ماحولیاتی مسائل پر قابو پالیا ہے لیکن وہ ابھی تک فطری تقاضوں کے سامنے بے بس دکھائی دیتا ہے۔ ان فطری تقاضوں کی ایک اہم کڑی انسانی صحت کے معاملات ہیں ۔ موجودہ دور کا انسان بے شمار سائنسی ارتقائی منازل طے کرنے کے باوجود اپنے آپ اور اپنی صحت کوفطری اثرات سے بچانے میں پوری طرح کامیاب نہ ہوپایا ہے۔ انسانی جسم میں کسی بھی قسم کی رونما ہونے والی تبد یلی کوطبی ماہرین مرض (deasese) کا نام دیتے ہیں ۔ یہ  تبد یلی ناک بہنے کی صورت میں سامنے آئے خواہ درد کا احساس پیدا ہونے کی شکل میں واقع ہو بردوطرح سے انسانی بدن کا چین و سکون تباہ کرنے کے لئے کافی ہوتی ہے۔ نزلہ و زکام ایسے الفاظ ہیں جن سے ہرانسان صرف آشنا ہی نہیں بلکہ کبھی نہ بھی ضرور اس کی گرفت میں آ چکا ہو گا۔ ہمارے ہاں صحت کا مناسب شعور نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کی اکثریت نزلے زکام کو معمولی بیماری سمجھ کر نظر انداز کرنے کی کوشش کرتی ہے اور اگر کچھ لوگ اس طرف دھیان بھی دیں تو ایک جوشاندہ پی لینے یا پھر ڈسپرین لین کو کافی خیال کر لیتے ہیں ۔ حالانکہ یہ  مرض اتنا غیر ضروری بھی نہیں جتنا کہ ہم تصور کرتے ہوئے اس کے علاج پر توجہ نہیں دیتے ۔ راقم کے نزدیک اگر اس بیماری کو موجودہ دور کی سب سے زیا دہ مضرت رساں کہا جائے تو کچھ غلط نہ ہوگا کیونکہ طبی ماہرین کے نزدیک اگر نزلے کابروقت اور مناسب سد باب نہ کیا جائے تو کئی موذی اور تکلیف دہ عوارض کو بدن انسانی پر مسلط کرنے کا ذریعہ بن کر تن درستی اور صحت مندی کو کھا جاتا ہے۔ نزلہ کے اثرات بد:۔ مسلسل نزلہ رہنے سے قبل از وقت بالوں کا سفید ہونا عام دیکھا جا سکتا ہے۔ قوت بصارت (نظر) میں کمزوری پیدا کر کے انسان کی زندگی کی رنگینیوں اور رونقوں کو مدھم کردیتا ہے۔ دماغی صلاحیتوں اور قابلیتوں کو کمزور کر کے زندگی میں حاصل کی جانے والی کامیابیوں کی رفتار کوکم کردیتا ہے۔ متواتر گئے میں لیس دار رطوبتوں کے گرتے رہنے سے آواز کی خوبصورتی اور گھن گرج میں بگاڑ پیدا ہو جاتا ہے۔ آدمی کسی محفل میں پرسکون ہوکر بات کرنے سے قاصر رہنے لگتا ہے۔ بروقت کھنگورے مارنے کی عادت اسے نفسیاتی مریض بنا کر رکھ دیتی ہے۔ اعصابی و عضلاتی ضعف لاحق ہو کر انسان کو وقت سے پہلے بوڑھاپے کی دہلیز پر لا کھڑا کرتا ہے۔ دانتوں کا پیلا پن، دانتوں میں کھوڑ پیدا ہونا اور حللق ، کانوں کے امراض پیدا ہونا، ناک کے افعال میں نقص واقع ہونا جیسے ناک کے نتھنے بند ہونا، ناک کے رستے سانس لینے میں دقت ہونا وغیرہ جیسے مسائل کا باعث بھی دائمی نزلہی بنتا ہے۔ علاوہ ازیں Maxillary sinucitis جیسا موذی اور


تکلیف دہ عارضہ بھی اس منحوس مرض کی وجہ سے لاحق ہوتا ہے تنفسی امراض میں سے برنکا ئیٹس(bronchitis) سانس کی نالیوں کی infection بھی گلے میں باقی رطو بات کرنے کی وجہ سے ہی ہوتی ہے۔ گلے کے رستے بھی رطوبات معدے میں لگاتارکر تے رہنے سے معدہ کزوری کا شکار ہو جاتا ہے۔ آہستہ آہستہ بھوک میں کی واقع ہو جاتی ہے۔ بھوک کم ہوجانے کی وجہ سے خوراک بھی کم کھائی جاتی ہے جس کے نتیجے میں پورا بدن انسانی کمزوری کی گرفت میں آجاتا ہے۔

نزلہ کی اقسام – (Typs of coryza) نزلہ کی کئی قسمیں ہوتی ہیں ۔ نزلہ بارد یہ سردی کی زیادتی سے حملہ آور ہونے والہ نزلہ۔ نزلہ حاریہ مزاج میں گرمی بڑھ جانے کی وجہ سے وارد ہونے والا زلہ۔ دائمی یا مستقل رہنے والا زلہ جسے عوام الناس اکثریت کیرابھی کہتے ہیں۔ان سب سے زیادہ خطرناک اور نقصان دہی کا باعث بنتا ہے۔

وبائی نزلہ زکام (influenza اکثر و بیشتر موسم بدلتے ہی حملہ آور ہوتا ہے اور اس حملے سے کوئی خوش نصیب ہی بچ پاتا ہے۔ وبائی زکام جسے عرف عام میں غلو (flu) بھی کہا جاتا ہے یہ ایک وائرل مرض (viral deasese) ہے جو چھوت (infection) کی شکل میں ایک فرد سے دوسرے کو اور دوسرے آدی سے تیسرے کومنقل ہو تا ہے۔ وبائی زکام یا نزلے کو ہم معیادی بھی کہہ سکتے ہیں اور یہ عام طور پر 10 سے 15 ایام میں خود بخود ہی ٹھیک ہو جاتا ہے۔ لیکن جب حملہ کرتا ہے تو اچھے خا صے بارعب اور معتبر لوگوں کی ناک بہادیتا ہے۔ ہر وقت کی سر سر اور سوں سوں ناک میں دم کر کے رکھ دیتی  ہے۔ زیر نظر تحریر میں ہم وبائی زکام اور نزلہ دائمی یعنی کیرا سے بچنے کی تراکیب ، گھریلو علاج اور غذائی تراکیب ضبط تحریر میں لائیں گے۔

علامات:- (symptoms) جب زکام حملہ آور ہوتا ہے تو بدن انسانی میں ٹوٹ پھوٹ ہونے لگتی ہے۔ ہلکے ہلکے درد کا احساس ہونے لگتا ہے۔ آنکھوں میں سرخی ظاہر ہونے لگتی ہے۔ سر میں بھاری پن پیدا ہو کر درد ہونے لگتا ہے۔ جسم میں سستی اور کمزوری کا غلیہ بڑ ھنے سے کسی کام کر نے کو جی نہیں چاہتا۔ بخار بھی ہو جاتا ہے عام طور پربخار 100 سے 101،102 تک ہوتا ہے۔ بھوک نہ ہونے کے برابر رہ جاتی ہے۔ پیاس میں اضافہ ہو کر پانی کی بار بارطلب تو ہوتی ہے مگر پینے کو جی نہیں چاہتا۔ ناک اور آنکھوں سے پہلی اورخراش دار رطوبت بہتی رہتی ہے۔ بار بارناک پونچھنے کی وجہ سے ناک سرخ ہو جاتی ہے۔ چہرے کی رنگت میں بھی سرخی در آتی ہے۔ وجوہات:- (causes) اچانک موسمی تبد یلی کوقبول نہ کرنے کی وجہ سے رد عمل کے طور پر بھی بعض اوقات ز کام کی علامات ظایر ہونا شروع ہو جاتی ہیں ۔ متواتر تیز دھوپ اور گرمی میں کام کرنے سے بھی نزلہ زکام کے اثرات وقوع پزیمہ ہو جایا کرتے ہیں ۔ مرطوب موسم سے گرم اور گرم آب وہوا سے سرد جگہ جانے سے بھی نزلہ حملہ آور ہوسکتا ہے۔ گرم و خشک غذاؤں کازیادہ استعمال ، مرغن تلی او بھتی ہوئی اشیاء کا تواتر سے استعمال بھی اس بیماری کو دعوت دیتا ہے۔ علاوہ ازیں بڑا گوشت (beaf) بیگن (bringle) دال مسور، چاول ،بریانی ، پلائو، چاکلیٹ، انڈا آملیٹ بیکری مصنوعات، بازاری مشروبات اور تیز مصالحہ جات والی غذاؤں کا خوراک میں شامل کرنا بھی نزنه دائی یعنی کیرا اور وبائی زکام کا باعث بنتے ہیں ۔ چائے، کافی قبوہ شراب اور سگریٹ نوشی بھی نزلہ و زکام کے حملے کی راہ ہموار کرتے ہیں ۔ موسم گرما میں گرم کھانے کے ساتھ ٹھنڈا پانی پیا مٹھنڈا پانی پی کر گرم گرم چائے یا کافی و قہوہ وغیرہ کا استعمال کرتا گرمی سے آتے ہی


ٹھنڈےپانی سے نہانا زیادہ دیر تک ننگے سر دھوپ میں پھرتا علاوہ ازیں موسمی تبدیلی کے مطابق اپنے معمولات میں تبدیلی نہ لانا بھی اس مرض کو حملے کی دعوت دیتا ہے۔ زیادہ ترش اشیا را اجار سکنجبین کا حد سے زیادہ استعمال ، بلا ضرورت ہاضمونے اور چورن چینیوں کاکھانا بھی نقصان کا سبب بنتا ہے۔

جدید تحقیق:۔ جدید تحقیق کے مطابق ناک کی جھلی (nasal membrane) کی سوزش (inflamation نزلے کا سبب بنتی ہے ۔ ناک میں پیدا ہو جانے والی رسولی (polipinose) بھی بعض اوقات اس مرض کا باعث بن جایا کرتی ہے۔ علاوہ ازیں موریسیلا (moricsella) سٹینلو کوکائی ( staphlococcus اورسٹر پچھو کو کائی (streptococcus) جیسے جرثوے بھی نزلہ و زکام پھیلانے کا سبب  بنتے ہیں۔ نیز نمیموئیلس ( haemophilus) اور رائنو وائرس (rhino viruse) کی چھوت (infection) بھی فلو اور زکام کو عام کرنے کا سبب بن جایا کرتی ہے۔

عمومی احتیاط:۔ احتیاط بہتر ہے علاج سے کے یونیورسل اصول کو اپنا کر ہم خاطر خواہ حد تک نزلہ وزکام سمیت کئی دیگر موسمی اور وبائی بیماریوں سے محفوظ رہ سکتے ہیں ۔ موسم کی تبدیلی کے مخصوص وقت سے چند روز پہلے ہی موسمی غذاء لباس اورطرز بودوباش اختیار کر لینی جا ہیئے ۔ شہد قادر مطلق کی طرف سے ایک نعمت ہے بہا سے کم نہیں اس میں حلیم کا ئنات نے کمال قوت شفا یابی رکھی ہے۔شہد کا با قاعده استعمال بدن انسانی میں بیماریوں کے خلاف قوت مدافعت کو مضبوط کرتا ہے۔ موسم کی مناسبت سے اس کا استعمال کیا جائے تو یہ میں کئی خطرناک امراض کے حملوں سے بچائے رکھتا ہے۔ موسم گرما میں شہد کے 2 سادہ پانی میں حل کر کے اور موسم سرما میں نیم گرم پانی میں ملا کر نہار منہ پینا بے شمارفوائد کا حامل ہوتا ہے۔ تیز دھوپ میں نئے سر گھومنے پھرنے سے پرہیز کریں۔ اگر باہر جانا بہت ہی لازمی ہوتو سر اور گردن ڈھانپ کر لیں۔ گرمی سے آنے کے فورا بعد نہانے اور ٹھنڈا پانی پینے سے بھی اجتناب کریں۔ سردیوں میں کان، ناک اور بیان ڈھانپ کری کی فضاء میں کیا جائے۔ عام طور پرمردی کا عمل ناک، کان اور پیشانی کے رستے ہی ہوا کرتا ہے۔

گھریلو تراکیب:۔ نزلے کے اچانک حملہ آور ہو جانے کی صورت میں درج ذیل جوشاندہ بنا کر 2 اور 3 خوراکیں پینے سے ہی اس کی تکلیف سے نجات مل جاتی ہے ۔ گل بنفشہ 10 گرام، گاوزبان 5 گرام لہسوڑیاں 3 گرام = تینوں اجزاء کو 2 کپ پانی میں پکا

کر حسب ضرورت چینی ملا کر 4 گھنٹے کے وقفے سے ایک کپ ہیں ۔ انشا ءالله زکام سے چھٹکارا حاصل ہو گا۔ ۔ گل بنفشہ 10 گرام گل نرخ 10 گرام، برگ گاوزبان 10 گرام ، اسطوخودوس 10 گرام، چھلکا بر زرد10 گرام = سب اجزاء کو بار یہ نہیں کر ہموزن مصری ملا کر رکھیں۔ 3 گرام خوراک دن میں 3 بار سادہ پانی سے استعمال کریں۔ یادر ہے اس سفوف کو حفظ ماتقدم

کے طور پر بھی استعمال کیا جائے تو کافی حد تک نزلے اور زکام کے حملے سے بچت بھی ہو جایا کرتی ہے ۔۔۔ علاوہ ازیں درج ذیل شربت کا متواتر کئی روز تک استعمال آپ کو دائمی نزلے کے چنگل سے بھی نجات دلا دے گا۔۔۔ املتاس 15 گرام ٹھی 10 گرام، گاو زبان 10 گرام ، پستاں 10 گرام ، عناب 10عدد = تمام اشیاء کو2 کلو پانی میں پکائیں جب عرق 112 کلورہ جائے تو ایک

کلو پانی میں قوام بنا کر ٹھنڈا ہونے پر صاف اور خشک بوتل میں محفوظ کرلیں۔ صبح، دوپہر اور شام قبل از غذا تین کھانے والے پیتے رہیں

انشاءالله ایسے افراد جویائی سانس کی وجہ سے نہیدار لینے پرمجبور ہو گئے تھے ان کا نہادر بھی چھوٹ جائے گا۔ ادویاتی علاج: نزلہ و زکام سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے روائتی دوا ساز اداروں نے بے شمار ادویات تیار کررکھی ہیں۔ ان میں چند باآسانی دستیاب ہونے وال تحریر کی جاتی ہیں ۔ نزلہ وز کام میں درج ذیل طی مرکبات کے استعمال سے بہتر نتائج حاصل ہوتے ہیں میرة مروارید خمیر پخشخاش خمیر به بنفشه نمیره ابریشم سادہ تخمیرہ گاوزبان ساده باعوق سپستاں بعوتی خیارشتنی منزلی، اطریفل اسطوخودوس ، اطریفل زمانی، اطریفل کشنیزی وغیرہ وغیرہ ۔ علاوہ ازیں جوشاندے اور شربت وغیرہ بھی بازار میں وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں جنہیں استعمال کر کے اس مرض سے جان چھڑائی جاسکتی ہے۔ گندم کے آٹے سے نکالے گئے پچھوک کو پانی میں ابال کر اس کی بھاپ لینا بھی نزلہ وزکام سے نجات دلاتا ہے۔ بلغمی مزاج والے افرا دلونگ با دارچینی کو بطور قہوہ استعمال کریں تو بھی انہیں افا قہ ملتا ہے۔ غذائی پرہیز : گرم مشرک مرفین اورتلی ہوئی اشیاء سے احتراز برتیں۔ بڑا گوشت، بینگن ،دال مسور ضرورت سے زائد چائے، کافی مقبوہ وغیرہ سے بھی اجتناب کریں۔ کولامشروبات، ڈیری مصنوعات ( ہلکے چھلکے بسکٹ ، سلائس اور رس وغیرہ کھائے جا سکتے ہیں) چاول، چکنائیاں، چوکلیٹ، مٹھائیاں اور تیز مصالحہ جات والی غذاؤں سے مل پرہیز کیا جائے۔ ہاں البتہ دیسی چوزے کی بینی نما شوربہ اور چربی سے صاف کیے گئے بکرے کے گوشت کی تری زکام اور نزلے سے جلد جان چھڑانے میں خاطر خواہ حد تک مد و معاون ثابت ہوتے ہیں ۔ دوران بیکاری بلکی پھلکی غذائیں کھائیں پوری، جوک یا گندم کا دلیا استعمال کریں تو بہت ہی مناسب ہو گا۔ اس کے علاوہ

پھلوں کے رس وغیرہ یا پھلوں کا استعمال بھی مفید ہوتا ہے۔ یا دریں اگر گھر یلو تراکیب آزمانے کے با وجود علامات برقرار ہیں تو کسی ماہر معالج سے مشاورت کر کے جلد از جلد بیماری سے پیچھا چھڑانے کی کوشش کریں۔ اگر آپ نے ذرا سی بھی کوتاہی کا مظاہرہ کیا تو خدانخواستہ مرض میں بگاڑ پیدا ہو کر آپ کے لیے مزید مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔


اپنے بارےمیں حکیم نیاز احمد ڈیال

Check Also

کورونا وائرس:بزرگ ہی سب سے زیادہ متاثر کیوں ہوتے ہیں؟

بڑھاپا بذات خود ایک بہت بڑی بیماری ہے جو انسان کو بے شمار مسائل کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے